12th Class Result 2019 12th Class Result 2019

فخر زمان کو انتہائی بدقسمتی کا سامنا کرنا پڑا


اسپورٹس

17/Oct/2018

News Viewed 1910 times

فخر زمان کو انتہائی بدقسمتی کا سامنا کرنا پڑا

پاکستان کی آسٹریلیا کے خلاف ابوظہبی ٹیسٹ کے دوران جب بیٹنگ لائن لڑکھڑائی تو فخر زمان مردِ بحران ثابت ہوئے اور ٹیم کو مشکل حالات سے نکالا، لیکن اپنی سنچری بنانے سے قبل خود ہی لڑکھڑا گئے۔آسٹریلین بالر نیتھن لیون نے پاکستانی بلے بازوں کے اوسان خطا کرتے ہوئے 57 رنز کے ہندسے پر صرف 6 گیندوں میں 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

یہ بھی پڑھیں: بلال آصف نے عمدہ بولنگ کا کریڈٹ مشتاق احمد کو دے دیا

آسٹریلین کپتان ٹم پین کی خوشی بتارہی تھی کہ ڈیبیو کرنے والے فخر زمان بھی وکٹ پر زیادہ دیر نہیں رک پائیں گے لیکن انہوں نے حریف ٹیم کی تمام امیدوں پر پانی پھیر دیا۔نسبتا بہتر وکٹ پر جب بیٹنگ لائن لڑکھڑائی تو فخر زمان نے کپتان سرفراز احمد کے ساتھ مل کر 147 رنز جوڑے۔ٹیم کو سنبھالنے کے بعد فخر زمان اپنے آپ کو نہیں سنبھال پائے اور نروس نائنٹیز کا شکار ہر کر مارنس لبوشین کی گیند پر 94 رنز بنانے کے بعد ایل بی ڈبلیو آئوٹ ہوگئے۔

مزید پڑھیں: کرس گیل کا بھارت اور بنگلادیش کے خلاف کھیلنے سے انکار

آئوٹ ہونے کے ساتھ ہی فخر زمان اپنے ڈیبیو میچ میں سنچری سے چند رن قبل آئوٹ ہونے پاکستان کے چوتھے بدقسمت بلے باز بن گئے۔ان سے قبل عاصم کمال 2003 میں جنوبی افریقہ کے خلاف اپنے ڈیبیو میں 99 رنز بنانے کے بعد آئوٹ ہوگئے تھے۔پاکستان کے 90 اور 100 رنز کے درمیان آئوٹ ہونے والے پہلے بدقسمت کھلاڑی عبدالقادر تھے جو اکتوبر 1964 میں آسٹریلیا کے ہی خلاف اپنے ڈیبیو میں 95 رنز بنانے کے بعد آئوٹ ہوئے تھے۔

ان کے علاوہ چوتھے بلے باز تسلیم عارف تھے جو جنوری 1980 میں روایتی حریف بھارت کے خلاف 90 رنز بنانے کے بعد آئوٹ ہوگئے تھے۔ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں سب سے پہلے اپنے ڈیبیو ٹیسٹ میں نروس نائنٹیز کا شکار ہو کر آئوٹ ہونے والے کھلاڑی ایف ایس جیکسن تھے جو جولائی 1893 میں آسٹریلیا کے خلاف 91 رنز بنا کر آئوٹ ہوگئے تھے۔

متعلقہ خبریں